ہالینڈ بھی سی پیک کے ساتھ ساتھ

ہالینڈ (ایمسٹر ڈیم) ڈچ سفیر نے اپنی حکومت کی جانب سے اس خواہش کا اظہار کیا ہے ، کہ   ڈچ حکومت گوادر بندر گاہ کو جدید خطوط پر چلانے کیلے فنی تعاون کی فراہمی پر تیار ہے، پاکستان کے حالات بدلتے ہی یورپ کا مزاج بھی تبدیل ہونے لگا ، چائنہ، روس اور ایران کے بعد ہالینڈ بھی سی پیک کا حصہ بننے کو بے تاب ہے،

گوادر بندرگاہ کی تعمیر کے حوالے سے مختلف ڈچ کمپنیاں کام کرنے کی خواہش مند ہیں، کیونکہ نیدر لینڈز میری ٹائم ، بندر گاہوں اور جہازرانی کے شعبوں میں مہارت رکھتا ہے، ہالینڈ کی سفیر نے پاکستان کے ساتھ تجارتی حجم بٹھانے پر بھی زور دیا، ڈچ سفیرکا مزید کہنا تھا کہ دونوں ممالک کے درمیان تجارت کا حجم ایک ارب ڈالر ہے، جس میں مزید اضافہ کے لیے کام کر رہے ہیں،